Select Menu

کسووال

کسووال
ہم آپ کو کسووال کی ویب سائٹ پر خوش آمدید کہتے ہیں

تازہ ترین

clean-5

موضوعات
بنک سکول و کالجز صحت
کسووال نیوز خریدوفروخت سٹی پروفائل
سرکاری ادارے نوکری کے مواقع ٹریول ایجنسی
تجارت ٖفیشن زراعت
اشتہارات جائیداد کی خرید وفروخت کسووال کی تصاویر
فروٹ مارکیٹ Alqalam Aaj Kal

گنج پن کی وجہ اور علاج دریافت؟



بہت جلد ایک کریم یا روغن گنجن پن کا علاج یا بالوں کو سفید ہونے سے روک سکے گا۔
یہ دعویٰ امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔
یو ٹی ساﺅتھ ویسٹرن میڈیکل سینٹر کی تحقیق درحقیقت کینسر کی رسولیوں کی تشکیل کے حوالے سے تھی مگر محققین نے حادثاتی طور پر وہ خلیات دریافت کرلیے جو بال بنانے اور انہیں سفید کرنے کا باعث بنتے ہیں۔
محققین کا کہنا تھا کہ اگرچہ یہ کام یہ جاننے کے لیے تھا کہ کچھ مخصوص اقسام کی رسولیاں کیسے بنتی ہیں، مگر ہم نے جانا کہ بال کس طرح سفید ہوتے ہیں اور ان خلیات کی دریافت کی جو کہ بالوں کی نشوونما بڑھاتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ اس معلومات کے ساتھ ہمیں توقع ہے کہ مستقبل میں ایسا طریقہ کار تشکیل دیا جاسکے گا جو کہ گنج پن کے علاج میں مددگار ثابت ہوسکے گا۔
تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ KROX20 نامی پروٹین جو کہ عام طور پر اعصاب کی نشوونما سے متعلق سمجھا جاتا ہے، جلدی خلیات میں تبدیلی لاتا ہے جو کہ بالوں کی افزائش کا باعث بنتا ہے۔
یہی خلیات ایک پروٹین ایس سی ایف بناتے ہیں جو کہ بالوں کی رنگت کے لیے ضروری ہوتا ہے۔
تحقیق کے دوران جب چوہوں میں ایس سی ایف کو جینز سے خارج کیا گیا تو بال سفید ہوگئے، جبکہ KROX20 کو نکالنے کے بعد بالوں کی افزائش رک گئی اور چوہے گنجے ہوگئے۔
اب محققین اس حوالے سے مزید تحقیق کرکے دریافت کرنے کی کوشش کریں گے کہ یہ دونوں عوامل کس طرح عمر بڑھنے سے اپنے افعال سست یا رک جاتے ہیں، جس کے نتیجے میں بال سفید یا گنج پن نمایاں ہوجاتا ہے۔


نمک کا زیادہ استعمال ہوسکتا ہے جان لیوا




اگر تو آپ اپنے کھانے میں زیادہ نمک ملانے کے عادی ہیں تو جان لیں یہ عادت درمیانی عمر میں فالج کا باعث بھی بن سکتی ہے۔
یہ انتباہ امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔
مزید پڑھیں : نمک جسم پر کیا اثرات مرتب کرتا ہے؟
سنسیناٹی چلڈرنز ہاسپٹل میڈیکل سینٹر کی تحقیق میں بتایا گیا کہ نوجوانی میں بہت زیادہ نمک کا استعمال خون کی شریانوں کو نقصان پہنچاتا ہے جس کے نتیجے میں درمیانی عمر میں دل کے دورے اور فالج جیسے امراض کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔
تحقیق کے مطابق غذا میں بہت زیادہ نمک کا استعمال خون کی شریانوں میں نمایاں تبدیلی لاتا ہے اور وہ سکڑ یا سخت ہوجاتی ہیں جو کہ خون کی شریانوں سے جڑے امراض کی ابتدائی علامات ہیں۔
تحقیق میں بتایا گیا کہ لڑکپن اور نوجوانی میں عالمی ادارہ صحت کی تجویز کردہ مقدار (6 گرام) سے زیادہ کا استعمال جسم کے اندر تبدیلیاں لاتا ہے جو کہ مستقبل میں ہارٹ اٹیک اور فالج کا باعث بن سکتی ہیں۔
اس تحقیق کے دوران 775 افراد کے مختلف نمونوں کا جائزہ لیا گیا اور معلوم ہوا کہ زیادہ نمک کے استعمال سے بازﺅں میں موجود شریانیں متاثر ہوتی ہیں۔
یہ بھی پڑھیں : نمک کی کم مقدار کا استعمال صحت کے لیے فائدہ مند
یہ شریانیں گردن اور دیگر اعضاءمیں بھی خون کی فراہمی کی رفتار پر اثر انداز ہوتی ہیں۔
اس تحقیق کے نتائج سان فرانسسکو میں 2017 پیڈیاٹرک اکیڈمک سوسائٹیز کے اجلاس میں پیش کیے گئے۔
اس سے قبل پبلک ہیلتھ انگلینڈ کی ایک تحقیق کے مطابق نمک کی روزانہ 6 گرام مقدار کا استعمال صحت کے لیے مناسب ہے تاہم اس سے زیادہ کھانا مختلف امراض کا باعث بن سکتا ہے۔
تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ باہر کی غذاﺅں میں نمک کا استعمال بہت زیادہ ہوتا ہے خاص طور پر جنک فوڈز میں تو اس کی مقدار محفوظ قرار دی گئی مقدار سے زیادہ ہوتی ہے۔

نجف کمپیوٹرز کسووال

نجف کمپیوٹرز کسووال




رانا الیکٹرونس اینڈ کمپیوٹرز کسووال

رانا الیکٹرونس اینڈ کمپیوٹرز کسووال



حج2017 کی بکنگ جاری ہے ۔

حج2017 کی بکنگ جاری ہے ۔





حج اور رمضان عمرہ کی بکنگ جاری ہے 

مزید معلومات کے لیے ان نمبرز پر رابطہ کریں
برانچ مینجر 
سید فضل عباس شیرازی
فون نمبرز
0345-8572343
0302-3557873

آفس اکاؤنٹنٹ
محمد منشاہ محسن
فون نمبرز
0333-1736918
0300-7832941
0405-410043

آفس مینجر
سیٹھ عامر شہزاد
0300-4225838

Kerajaan